Australia
+61 455 388 733
support@pcia.info

سندھ کے وزیراعلی کا تاریخی سفر۔ کچھوے سے خرگوش تک

Pakistani Community in Australia

سندھ کے وزیراعلی کا تاریخی سفر۔ کچھوے سے خرگوش تک

عید کی آمد آمد ہے۔ عید اور رمضان سے پہلے ہی کرونا کا
چاند نظر آگیا تھا۔ کچھ لوگ اب تک نہ دیکھ پائے ہیں۔ اب تک
اپنے چاند کے منتظر ہیں۔ خصوصا ہمارے دیس میں جہاں
ہمیشہ سے عید “عیدین” میں تبدیل ہوجایا کرتی
ہے۔قصورہمار ابھی نہیں ہمیں اطلاعات نوٹنکیوں کے ذریعے
پہنچتی ہے ۔ اعتبار تو ہم دیس چلانے والوں کا نہیں کرتے پھر
فیس چلانے والوں کا کیسے کرلیں۔
اس دفعہ کا رمضان خیرات بٹتے دیکھنے میں گزر گیا۔ شروع
کے ایام میں اپنی قوم کے خدا ترس ہونے پر یقین بڑھتا گیا۔
اور یہ سب کچھ سوشل میڈیا کے مرہون منت رہا۔ ہمارے کئی
احباب ہم سے بحث میں الجھے رہے ۔ وہ کہتے تھے کہ خیرا
ت بانٹنے کے لئیے دور حاضر میں کیمرے کا ہونا ضروری
ہے۔ جب کہ ہمارا کہنا تھا کہ کالر مائیک یا انٹرویورز مائیک
کی بھی ضرورت پڑ سکتی ہے۔
رمضان سے پہلے لاک ڈاؤن شروع ہوچکا تھا ۔ جو لوگ اپنی
زات میں قید تھے وہ باہر نکل کر بھی اپنے گھروں میں قید
ہوچکے تھے۔ وزیراعلی سندھ کی پھرتی دیکھ کر حیرت کے
غوطوں کو بھی غوطے آرہے تھے۔
اور یہ بھی دیکھا کہ ‘قبلہ ‘ خالی ہوچکاتھا۔ فنڈز ”کچھ کرونا”
پہ جانے کا خدشہ تھا اور ” کرونا ” پہ آنے کا سو ”پلٹ کر
جھپٹنا اور جھپٹ کر پلٹنا ” موصوف پر طاری ہوچکاتھا۔کسی
کی نیت پر شک کر نے والے ہم کون ہوتے ہیں۔ اللہ دلوں کے

حال جانتاہے۔ ہم تو شکایت کررہے ہیں کہ کرونا سے پہلے
موصوف کی آرام طلبی کی کیا وجوہات تھیں۔اچا نک کچھوا
ہرن کا روپ دھار لے تو حیران ہونا فطرتی عمل ہے۔اصل میں
اس بات کو سندھی قوم بھی نہیں سمجھ پارہی ہے۔ قومیت
کازہر اس حد تک سرائیت کر چکا ہےکہ وہ لوگ جو برسوں
سے سندھ کی حکمران پارٹی کے عتاب کا شکار ہیں فقط
سندھی ہونے پر ان کی حمایت پر مجبور ہیں۔ کون نہیں جانتا
کہ سندھ کے اسکولوں کاتعلیمی معیار کیا ہے۔ کوٹہ سسٹم نہ
ہوتا تو شائد کراچی کی شاہانہ نشتوں پر براجمان ہونا ایک
دیوانے کا خواب بن جاتا۔ اپنے زہن سے یہ فرسودہ خیالات
نکال پھینکئے ۔ دوستی کا معیار قومیت سے باہر نکل کر
ٹٹولئیے۔ اب یہی دعاہےکہ ہمارے چیف منسٹر صاحب کرونا
فنڈز اکٹھا کرنے کے بعد دوبارہ کچھوے کے خول میں واپس
نہ چلے جائیں۔

ہمارے چینل کو سبسکرائب کیجئے
http://www.youtube.com/c/NADEEMNADVI
ہمارا فیس بک پیج
https://www.facebook.com/hellonadeemnadvi

Leave a Reply